پاکستان میں بھارتی دہشت گردی کے ثبوت ایک ایک کر کے گنوائے ، معید یوسف

بھارت پاکستان کی دہشت گردی کی بات کرتاہے ، ہم کشمیر کی بات کریں تو اس کو تکلیف ہوتی ہے، عالمی امن کےلیے پاکستان کی قربانیاں کسی سے ڈھکی چھپی نہیں، مشیر برائے قومی سلامتی کی پریس کانفرنس

لاہور  وزیراعظم عمران خان کے مشیر برائے قومی سلامتی معید یوسف نے کہا ہے کہ بھارت پاکستان کی دہشت گردی کی بات کرتا ہے ، ہم کشمیر کی بات کریں تو اس کو تکلیف ہوتی ہے ، پاکستان میں بھارتی دہشت گردی کے ثبوت ایک ایک کر کے گنوائے ، عالمی امن کے لیے پاکستان کی قربانیاں کسی سے ڈھکی چھپی نہیں ہیں ، مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کی قراردادوں اور کشمیری عوام کی خواہشات کے مطابق حل ہونا چاہیے۔اس حوالے سے تفصیلات کے مطابق لاہور پریس کلب میں میڈیا سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ میں نے اپنے ٹی وی انٹرویو میں کہا تھا بھارت سے کون سا ہمسایہ ملک خوش ہے؟ خطے میں امن کے لیے ہمسایوں کے ساتھ اچھے تعلقات ہماری ترجیح ہے، اسی لیے پاکستان افغانستان میں امن کا خواہاں ہے، چین ہمارا شراکت دار بنا ہے تو امریکہ بھی چاہے تو سرمایہ کاری کرے، ہمیں خود پراعتماد ہوناچاہیے، ہمیں کسی سے کوئی ڈر نہیں، کیوں کہ پاکستان امن کے لیے کھڑا ہے ، جب کہ دوسری طرف بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں جانوروں جیسارویہ رکھا ہے، بھارت کے توسیع پسندانہ عزائم سےخطے کے امن کو خطرات لاحق ہیں ، فاروق عبداللہ نے کہاتھا چین کو ہم پر مسلط کریں لیکن بھارت کو نہیں ، مسئلہ کشمیر یو این قراردادوں اور کشمیری عوام کی خواہشات کے مطابق حل ہونا چاہیے۔

معید یوسف نے کہا کہ پاکستان خطے میں امن اور خوشحالی کے لیے کوشاں ہے، اور عالمی امن کےلیے پاکستان کی قربانیاں کسی سے ڈھکی چھپی نہیں ہیں ، دنیا میں پاکستان امن کاپیغام دیتا ہے اور اس کے لیے کام ہورہا ہے، اقتصادی راہداری خطے کی ترقی کا منصوبہ ہے ، جس میں چین ہمارا شراکت دار بنا ہے تو اگر امریکہ بھی چاہے تو پاکستان میں سرمایہ کاری کرے۔