مقبوضہ جموں وکشمیر کے مظلوم عوام کی جدو جہد آزادی تاریخ کے نازک ترین موڑ میں داخل:جموں وکشمیر سالویشن مومنٹ چئیرمین الطاف احمد بٹ

مظفرآباد( ) جموں وکشمیر سالویشن مومنٹ کے چئیرمین الطاف احمد بٹ نے کہا ہے کہ مقبوضہ جموں وکشمیر کے مظلوم عوام کی جدو جہد آزادی تاریخ کے نازک ترین موڑ میں داخل ہو چکی ہے، کشمیری عوام پر بھار تی مظالم میں بے پناہ اضافہ ہو چکا ہے،بھارتی محاصرے میں مقبوضہ جموں وکشمیر کے عوام کی نظریں پاکستان کے عوام، یوتھ، حکمرانوں، سیاسدانوں اور مسلح افواج پاکستان پر لگی ہیں۔ ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے الطاف احمد بٹ کا کہنا تھا کہ کشمیری عوام اپنے بنیادی حق خودارادیت کے لے جدو جہد کر رہے ہیں۔ جو 73 سالوں سے ہندوستانی فوجوں کے محاصرے میں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی یوتھ کو کشمیریوں کی اس جدو جہد میں فیصلہ کن کردار ادا کرنا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کشمیریوں کی جدو جہد کا کسی معاشی یا اقتصادی مسائل سے تعلق نہیں بلکہ وہ اپنا بنیادی نسانی حق چاہتے ہیں جس کے ذریعے آزادانہ ماحول میں وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں۔ انہوں نے کہا کہ1931میں جب بائیس مسلمانوں نے اپنے سینوں پر گولیاں کھا کر ایک تحریک کی بنیاد رکھی اسی کا تسلسل جاری ہے . انہوں نے کہا کہ جموں وکشمیر میں 5 اگست2019 سے تسلسل کے ساتھ روزانہ معصوم بچے اور نوجوان شہید ہو رہے ہیں، کنٹرول لائن پر ہندوستانی فوجیں آگ برساتی ہیں ۔ پاکستان کے حکمران اور سیاستدانوں کو اکھٹے بیٹھ کردنیا کو کوئی موثر پیغام دینا یو گا۔ انہوں نے کہا کہ ہم مسلح افواج پاکستان کو سلام پیش کرتے ہیں جنہوں نے ہندوستانی جارحیت کا راستہ روکا ہوا ہے۔