بھارت کشمیریوں کی آواز کو دبانے کیلئے ظلم و تشدد کا ہر ہتھکنڈہ استعمال کر رہا ہے ، کل جماعتی حریت کانفرنس

سرینگر : غیر قانونی طور پر بھارت کے زیر تسلط جموںوکشمیر میں کل جماعتی حریت کانفرنس نے افسوس ظاہر کیا ہے کہ بھارت جموںوکشمیر پر اپنے غیر قانونی تسلط کو طول دینے اورکشمیریوںکی اپنے ناقابل تنسیخ حق ، حق خودارادیت کے حصول کی جدوجہد کو کمزور کرنے کیلئے ہر ظالمانہ ہتھکنڈہ استعمال کر رہا ہے۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق حریت کانفرنس کے ترجمان نے آج عدم تشدد کے عالمی دن کے موقع پر جاری ایک بیان میں کہا ہے کہ مودی کی فسطائی حکومت مقبوضہ جموں و کشمیر کے عوام کو محکوم رکھنے کیلئے ظلم و تشدد کا ہر ہتھکنڈہ استعمال کر رہی ہے۔ آر ایس ایس کی حمایت یافتہ مودی حکومت کشمیریوں کو ان کی شناخت اور مادر وطن سے محروم کرنے کی سازش کر رہی ہے اور جموںوکشمیر کی مسلم اکثریتی شناخت کو اقلیت میں تبدیل کرنے کے درپے ہے۔

مقبوضہ علاقے میں اسلام سے قبل کی ہندو تہذیب کی بحالی بی جے پی اور آر ایس ایس کا ہدف ہے۔ ترجمان نے واضح کیا کہ مودی کی زیرقیادت بھارتی حکومت شہریت کے متنازعہ ترمیمی ایکٹ جیسے مسلم مخالف قوانین کے ذریعے بھی مسلمانوں کے حقوق کو محدود کرنے کی کوشش کررہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت مسلمانوں اور دیگر اقلیتوں کیلئے خطرناک مقام بن گیا ہے کیونکہ نریندرمودی کی پالیسیوں کا مقصدلاکھوں مسلمانوں کوشہریت سے محروم کرنا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ بھارت میں مسلمان اور دلت ہندو انتہا پسندوںکا نشانہ بن رہے ہیں۔ترجمان نے کہا کہ بھارت کو عدم تشدد کا عالمی دن منانے کا کوئی حق حاصل نہیں ہے اور عالمی برادری کو بھارت اور مقبوضہ جموںوکشمیرمیں مسلمانوںکے خلاف ظلم و تشدد رکوانے کیلئے بھارتی حکومت پر دبا? بڑھانا چاہیے۔ انہوںنے انسانی حقوق کی بین الاقوامی تنظیموں پر زوردیا کہ وہ بھارت میں مسلمانوں اور دیگر اقلیتوں کے حقوق کیلئے اپنی آواز بلند کریںاور بھارت کو ملک اور غیر قانونی طورپر اس کے زیر تسلط جموں وکشمیر میں بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزیوں پر جواب دہ بنائیں۔ادھر کشمیرمیڈیاسروس کی طرف سے آج عدم تشدد کے عالمی دن کے موقع پر جاری کی گئی ایک تجزیاتی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ بھارت کے غیر قانونی زیر تسلط جموںوکشمیرمیں گزشتہ 30برس کے دوران بھارتی فوجیوں کے ہاتھوں 95ہزار سے زائد نہتے کشمیریوں کے قتل اور پورے بھارت میںآر ایس ایس کے غنڈوں کے اقلیتوں پر ظلم و تشدد نے عدم تشدد کے گاندھی کے نظریہ کی حقیقی تصویر کوبے نقاب کر دیا ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ آج جب بھارت میں گاندھی کا یوم پیدائش منایا جارہا ہے لیکن یہ ان کیلئے شرم کی بات ہے کہ ملک میںاقلیتوں کو بی جے پی اور آر ایس ایس کے غنڈوں کی طرف سے ظلم و تشدد کا سامنا ہے۔ بھارت بھر میں مسلمانوںاور دیگر اقلیتوںکو کئی دہائیوں سے منظم امتیازی سلوک ، تعصب اور تشدد کا سامنا ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا کہ 2014 میں بھارت میں نریندر مودی اور بی جے پی کے برسر اقتدار آنے کے بعد سے مسلم دشمن جذبات کو بڑھکایا گیا ہے۔