بھارت سے سرحدی کشیدگی، چین نے بڑا کام کردیا

 

نئی دہلی  بھارت چین سرحدی تنازع کے حوالے سے نئی پیشرفت سامنے آئی ہے۔  بھارتی میڈیا نے اپنے فوجی ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ چینی فوجی اسلحے سمیت ‘اپنی’ حدود میں واپس چلے گئے ہیں۔

بھارتی خبررساں ادارے اے این آئی کے مطابق چینی فوج ایک سے دو کلومیٹر پیچھے چلی گئی ہے۔ فوجی اپنی گاڑیاں اور دیگر سامان بھی واپس منتقل کرچکے ہیں۔ رپورٹ کے مطابق چین کی جانب سے یہ فیصلہ کور کمانڈر سطح پر ہونے والے مذاکرات میں کیاگیا۔

خیال رہے بھارت کی جانب سے پہلے مسلسل اس بات کی تردید کی جارہی تھی کہ چین اس کی حدود پر قبضہ کرچکا ہے۔ انڈٰین وزیر اعظم نریندر مودی بھی کہہ چکے ہیں کہ چینی فوج بھارت کے اندر تک نہیں آئی ہے۔بھارتی میڈیا کا یہ تازہ ترین بیان انڈٰین وزیراعظم کے گزشتہ بیانات پر کئی سوالیہ نشان ثبت کرتا ہے۔

پارک لین ریفرنس، احتساب عدالت کا آج آصف علی زرداری سمیت تمام ملزمان پر ہر صورت فردجرم عائد کرنے کا فیصلہ

سوشل میڈیا پر بھی کئی بھارتی صارفین یہ سوال کرتے نظرآئے کہ کیا مودی قوم سے جھوٹ بول کر گمراہ کررہے تھے کہ چینی فوج انڈین حدود میں نہیں آئی۔

قومی ٹیم کے تین کھلاڑی بدھ کو انگلینڈ روانہ ہونگے

ایک صارف نے بھارتی نیوز ایجنسی کے ذرائع پر شبہ ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی میڈیا تو کچھ بھی کہتا رہتا ہے حقائق چین کے بیان کے بعد ہی سامنے آئیں گے۔

ملک کی ستر سالہ تاریخ میں عمران خان کے سوا  ہر حکمران نے “خالی نعروں اور جھوٹے لاروں ”  پر قوم کو ٹرخایا ،احساس پروگرام ریاست مدینہ کی جانب  نکتہ آغاز ہے:انصاف ویلفیئر ونگ

یہ بھی کمال ہے، جو شخص عرب میں چپڑاسی کے اقامے پر کام کرتا رہا آج کل وہ۔۔۔۔احسن اقبال کی تنقید پر ڈاکٹر شہباز گل بھی میدان میں آگئے

خیال رہے ہمالیہ ریجن میں چین اور بھارت کے درمیان لائن آف ایکچوئل کنٹرول (ایل اے سی)پرسرحدی حد بندی کے حوالے سے طویل تنازع چلا آرہا ہے تاہم پندرہ جون کو دونوں ملکوں میں کشیدگی نئی انتہاوں کو پہنچ گئی جب دونوں ملکوں کے فوجی آمنے سامنے آئے تو چینیوں نے کرنل سمیت بیس بھارتی فوجی مار گرائے تھے۔

چین کے اس اقدام پر بھارت کا سارا جنگی جنون سمندر کی جھاگ کی طرح بیٹھ گیااور وہ تب سے اب تک مسلسل مذاکرات کی کوشش کررہا تھا۔