مقبوضہ کشمیر، بھارتی فوج نے بزرگ کو گاڑی سے اتار کر شہید کر دیا

بھارتی فوج نے 60 سالہ بزرگ کو ان کے 3 سال کے نواسے کے سامنے قتل کر دیا گیا، نواسہ معجزانہ طور پر بھارتی فوجیوں کی فائرنگ سے محفوظ رہا، بچہ سہما ہوا نانا کی لاش پر بیٹھ کر روتا اور مدد کو پکارتا رہا

مظفرآباد(اردوپوائنٹ تازہ ترین اخبار-01جولائی2020ء) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کے ظلم کا سلسلہ جاری ہے۔ اسی دوران ایک اور افسوس ناک واقع پیش آیا ہے جس میں بھارتی فوج نے بزرگ کو کار سے اتار کر قتل کر دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق بھارتی فوج نے 60 سالہ بزرگ کو ان کے 3 سال کے نواسے کے سامنے قتل کر دیا گیا، نواسہ معجزانہ طور پر بھارتی فوجیوں کی فائرنگ سے محفوظ رہا، بچہ سہما ہوا نانا کی لاش پر بیٹھ کر روتا اور مدد کو پکارتا رہا۔شہید ہونے والے شخص کے بیٹے کا کہنا ہے کہ بھارتی فوج نے اس کے والد کو زبردستی گاڑی سے اتارا اور قتل کر دیا۔ بیٹے نے بتایا کہ ظالم بھارتی فوج نے اس کے والد کو گولیاں مار کر قتل کیا۔ شہید کے اہلِ خانہ کے مطابق بشیر احمد خان سامان لینے کا کہہ کر گھر سے سوپور جانے کے لیے نکلے تھے۔

اس حوالے سے مزید بتایا گیا ہے کہ بشیر احمد پیشے کے اعتبار سے ایک ٹھیکے دار تھے وہ اپنے تین سالہ نواسے عیاد جہانگیر کو اپنے ساتھ لے کر سوپور میں تعمیراتی سائٹ پر جارہے تھے، اہل خانہ کا کہنا ہے کہ ان کو سکیورٹی فورسز نے قتل کیا ہے‘ بشیر احمد کے بیٹے کا کہنا ہے کہ وہ صبح 6 بجے گھر پر اپنی ایک زیرتعمیر بلڈنگ کا جائزہ لینے سوپور کے لیے نکلے تو ان کا 3سالہ نواسہ ان کے ہمراہ تھا۔

خیال رہے کہ کشمیر اور لائن آف کںٹرول پر بھارت کی جانب سے لگاتار قتل عام کا سلسلہ جاری ہے۔ آئے دن کشمیر میں مسلمانوں کے قتل کی خبریں سامنے آتی رہتی ہیں، لائن آف کںٹرول پر بھی بھارتی فوج کی جانب سے فائرنگ کا سلسلہ جاری رہتا ہے، تا ہم پاکستان کی جانب سے بھی بار بار جواب دیا گیا ہے اور بھارت کو اکثر منہ کی کھانی پڑی ہے، لیکن ابھی تک بھارت کی جانب سے یہ شرمناک رویہ جاری ہے۔ کشمیر میڈیا کی رپورٹ کے مطابق بھارتی فوج کی جانب سے رواں سال کے پہلے6ماہ میں مجموعی طور پر147معصوم کشمیریوں کو شہید کیا جاچکا ہے۔ تا ہم اب ایک اور افسوس ناک واقع سامنے آیا ہے جس میں ایک بزرگ شہری کو اس کے 3 سال کے نواسے کے سامنے بے رحمی سے قتل کر دیا گیا ہے۔