ڈرامہ ’’عہدوفا‘‘ پرپابندی عائد کرنے کی درخواست مسترد

لاہور ہائیکورٹ نے آئی ایس پی آر کی پروڈکشن میں تیار کیے جانے والے ڈرامہ سیریل ’’عہدوفا‘‘ پر پابندی کی درخواست ناقابل سماعت قرار دے کر مسترد کردی ۔

درخواست محمد ذیشان نامی شہری کی جانب سے دائر کی گئی تھی جس میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ عہدِوفا میں سیاستدانوں اور میڈیا کی کردار کشی کی جا رہی ہے جس سے بیرونی دنیا میں پاکستان کا منفی تاثر جا رہا ہے۔

جسٹس شاہد وحید نے سماعت کے آغاز میں درخواست گزارسے سوال کیا کہ آپ کیا کرتے ہیں ؟جس پر انہوں نے بتایا کہ وہ قانون کے طالبعلم اور مالا کنڈ کے رہائشی ہیں۔

عدالت نے استفسار کیا کہ آپ کو پڑھتے پڑھتے کیا سوجھی جس پر درخواست گزار نے جواب دیا کہ ڈرامہ دیکھ کر دکھ ہوا،اس لیے درخواست دائر کی۔

جسٹس شاہد وحید نے پوچھا کہ کیا آپ نے عدالت آنے سے پہلے پیمرا کو درخواست دی؟ درخواست گزار نے کہا کہ پیمرا کو درخواست نہیں دی کیونکہ ان سے شنوائی کی توقع نہیں ہے۔

اس پر عدالت نے ہدایت کی کہ درخواست گزار پہلے پیمرا سے رجوع کرے، اگر وہاں سے شنوائی نہ ہوتو پھر عدالت سے رجوع کیا جاسکتا ہے۔

ڈرامہ ’’عہد وفا ‘‘ پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی پیشکش اورلارنس کالج مری میں گہری دوستی کے بندھن میں بندھنے والے 4 دوستوں کی کہانی ہے۔ڈرامے کے لکھاری مصطفیٰ آفریدی اور ہدایتکار سیفی حسن ہیں۔

کاسٹ میں عثمان خالد بٹ، احد رضا میر، وہاج علی اور احمد علی اکبر کے علاوہ زارا نور عباس، علیزے شاہ، حاجرہ یامین اور ونیزہ احمد شامل ہیں۔