5اگست جموں و کشمیر کی تاریخ میں سیاہ ترین دن ہے، عزیر احمد غزالی

مظفرآباد 29 جولائی ( ) پاسبان حریت جموں وکشمیر کے چیئرمین عزیراحمدغزالی نے 5اگست 2019کو بھارت کے غیر قانونی زیر تسلط جموںوکشمیر کی تاریخ کا سیاہ ترین دن قراردیا ہے جب جعلی جمہوریت کے دعویدار بھارت نے جموںوکشمیر کی عالمی سطح پر تسلیم شدہ متنازعہ حیثیت کو تبدیل کرنے کی ناکام کوشش کی تھی ۔
 عزیراحمدغزالی نے مظفر آباد سے جاری ایک بیان میںکہاکہ بھارت نے جموںوکشمیر کے تشخص اور وحدت پر حملہ کرتے ہوئے نہ صرف اسکی ریاستی شناخت تبدیل کر کے دو انتظامی علاقوں میں تقسیم کیا بلکہ براہ راست اپنی عملداری میں بھی لے لیاتھا۔انہوںنے کہاکہ بھارت نے ماضی میں کشمیری عوام سے کئے گئے وعدوں اور معاہدوںکو نہ صرف  یکطرفہ طور پر توڑا بلکہ بدعہدی ، جھوٹ اورمکروفریب کی بدترین مثال قائم کی۔انہوں نے کہا کہ بھارت نے مقبوضہ جموںو کشمیر سے متعلق اقوام متحدہ اور عالمی برادری کے ضابطوں اور اصولوں کو یکسر نظر انداز اورپاکستان کی فریقانہ حیثیت کو بالائے طاق رکھتے ہوئے یکطرفہ طور پر ظالمانہ قوانین مسلط کر کے مقبوضہ علاقے میں تاریخ کی بدترین دہشتگردی کا ارتکاب کیاہے۔عزیر غزالی نے کہا کہ بھارتی سامراج نے گزشتہ تہتر برسوں سے بالعموم اورگزشتہ دو سال کے دوران بالخصوص لاکھوں کشمیریوںکے سیاسی، سماجی، انسانی اور مذہبی حقوق بری طرح پامال کئے ہیں ۔انہوںنے مزید کہاکہ کشمیری عوام تمام تر ریاستی جبر ،ظلم اور دھونس کے باوجود لاکھوں قابض افواج کے پہرے میں اٹھائے گئے تمام غیر قانونی اقدامات ، مسلط شدہ جبری قوانین کو مسترد کرتے ہیں۔انہوںنے اقوام متحدہ سے مطالبہ کیا کہ وہ مقبوضہ جموںو کشمیر کی جبری تقسیم ، ریاستی درجے کے خاتمے ، لاکھوں بھارتی شہریوں کو ڈومیسائل کے اجرا، ہزاروں کشمیریوں کی گرفتاری اور نوجوانوں کے قتل عام پر فوری طور پر بھارت کو جواب دہ بنائے اور مقبوضہ علاقے میں آزادانہ، منصفانہ اور غیر جانبدارانہ استصواب رائے کرائے تاکہ کشمیری عوام اپنے سیاسی مستقبل کا فیصلہ خود کر سکیں۔ عزیراحمدغزالی نے آزاد جموں کشمیر کے عوام سے اپیل کی کہ وہ 5 اگست کو بھارت کیخلاف یوم احتجاج کے طورپر منائیں اور مقبوضہ جموںوکشمیر کی بھارتی تسلط سے آزادی اورکشمیریوںکے حق خودارادیت کیلئے آواز بلند کریں۔